حافظ نعیم الرحمٰن نے کل انٹرمیڈیٹ بورڈ کے سامنے دھرنا دینے کا اعلان

کراچی (نیوزٹویو)امیر جماعتِ اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمٰن نے کل انٹرمیڈیٹ بورڈ کے سامنے دھرنا دینے کا اعلان کردیا۔
حافظ نعیم الرحمٰن نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ کل انٹر بورڈ آفس کے سامنے11 بجے دھرنا ہوگا۔
اُنہوں نے کہا کہ طلبا دھرنے میں اپنی مارک شیٹس لے کر آئیں، فرسٹ ایئر امتحانات میں کراچی کے 60 فیصد بچوں کو فیل کردیا گیا، ہم اس مسئلے کو نظر انداز نہیں کر سکتے۔
جماعتِ اسلامی کے رہنما نے کہا کہ نگراں وزیر اعلیٰ سندھ کے بیان پر افسوس ہے، کل دھرنے میں آئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کریں گے، شہر کا مقدمہ شہر کے نوجوانوں کے ساتھ مل کر لڑ رہے ہیں۔
اُنہوں نے کہا کہ گیس کا بحران ہو تو صرف جماعت اسلامی نکلتی ہے۔
حافظ نعیم الرحمٰن نے کہا کہ ایف بی ایریا میں نعمت اللّٰہ خان نے دل کے اسپتال کا تحفہ دیا، اسپتال کو ایم کیو ایم نے تباہ کیا۔
اُنہوں نے کہا کہ میئر نرسنگ اسکول کو 10 سال کا معاہدہ کرکے آؤٹ سورس کر رہے ہیں، عباسی شہید اسپتال کو تباہ کر دیا گیا، آئی سی یو تک کام نہیں کر رہا ہے۔
جماعتِ اسلامی کے رہنما کا کہنا ہے کہ ہم شہر کی سب سے بڑی جماعت ہیں، نتیجے کو تبدیل کیا گیا، 28 جنوری کو باغ جناح میں جلسے کریں گے تو شہر کا سیاسی رخ پتا چلے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں