ممبر قومی اسمبلی راشد شفیق کی راولپنڈی ترقیاتی منصوبوں کے حوالے سے پریس کانفرنس

راولپنڈی (نیوزٹویو)ممبر قومی اسمبلی و پارلیمانی سیکرٹری برائے نارکوٹکس شیخ راشد شفیق نے پریس کانفرنس کی۔ پریس کانفرنس میں راولپنڈی کے ترقیاتی منصوبوں کے حوالے سےکہنا ہے کہ راولپنڈی میں اربوں روپے کے ترقیاتی منصوبوں کا کام ہوا۔ کل وزیراعلیٰ پنجاب راولپنڈی میں کالج کو یونیورسٹی کا درجہ دینے آرہے ہیں۔ اس کی علاوہ لئی ایکسپریس وے کا پی سی ون پر دستخط ہوں گے۔25 دسمبر تک لئی ایکپریس وے پر کام شروع ہوجائے گا۔ سکولوں میں رش کے باعث طلبا زمین پر بیٹھ کر تعلیم حاصل کرتے تھے۔ گرلز کالجز اور سکولوں میں نئے بلاک بنائے ہیں۔ راولپنڈی ضلع تعلیمی اعتبار میں چھٹے نمبر پر ہے۔ راولپنڈی ویمن یونیورسٹیوں میں فنڈر دے رہے ہیں۔ ماں بچہ اسپتال سوا پانچ ارب کی لاگت سے بن رہا ہے۔جسکا دسمبر میں افتتاح ہوجائے گا۔ ڈی ایچ کیو میں 60 کروڈ کی لاگت سے اسپتال کی عمارت بہتر کر رہے ہیں۔ ڈائیلسز کے لیے200  نئی مشینری لگا رہے ہیں۔ ہولی فیملی اور ریلوے اسپتال میں بچوں کا بلاک بنا رہے ہیں۔ تین سالوں میں تمام یونین کونسلوں میں ترقیاتی کام کیے ہیں۔راولپنڈی کےرہائشیوں کے مسائل پر بات کرتے ہوئے انکا کہنا ہے کہ راولپنڈی میں پانی کی قلت کے لئے راول ڈیم سے اضافی لائن لی جارہی ہے۔ جبکہ گیس کی شارٹیج کا مسئلہ بھی زیرِغور ہے۔انکا مزید کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب نے ایم پی اے اور ایم این ایز کو اربون روپوں کے منصوبوں کی منظوری دی ہے۔ پانچ کروڑ کی لاگت سے پناہ گاہ آر آئی یو میں بنا رہے ہیں۔ تین سالوں میں راولپنڈی کے بنیادی مسائل حل کیے ہیں۔جبکہ پنجاب بھر میں سب سے زیادہ ترقیاتی کام راولپنڈی میں ہوئےہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں