جبری مشقت لینے والے بھٹہ ما لکان کے خلاف اسلام آباد ا نتظا میہ کا ا یکشن ، مقدمات درج

وفاقی دارالحکومت میں بھٹوں پر مزدوروں سے جبری مشقت کے خلاف کیس میں اسلام آباد انتظامیہ نے پیشگی ادائیگی کے ذریعے جبری مشقت کرانے والے بھٹہ مالکان کے خلاف کا رروا ئی کرتے ہو ئےمقدمات درج کر لئے ہیں اورساتھ ہی انتظامیہ کی جانب سے عدالت کو بھی آگاہ کردیا گیا ہے اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے دارالحکومت کی ا نتظامیہ با لخصوص اسسٹنٹ کمشنر کے کام کی تعریف کی ہے اسٹیٹ کو نسل دا نیال حسن نے عدا لت کو آگاہ کیا کہ عدالتی حکم کے مطابق اسلام آباد انتظامیہ نے جبری مشقت کے خلاف ایکشن لیاجو ورکرز واپس جانا چاہتے تھے  انتظامیہ نے انہیں واپس بھیجنے کے لیے مکمل سہولت فراہم کی پیشگی لینے والے بھٹہ مالکان کے خلاف مقدمہ بھی درج کیا گیا ہے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ اسلام آباد انتظامیہ نے بڑا زبردست کام کیا ، ہم سراہتے ہیں تفصیلی رپورٹ بھی اس سے متعلق آئندہ سماعت تک جمع کرا دیں عدالت نے وفاقی دارلحکومت سے جبری مشقت ختم کرنے کے حکم پر عمل در آمد جاری رکھنے کی ہدایت کی ہےعدالت نے کیس کی مزید سماعت آئندہ ماہ تک ملتوی  کر دی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں