انتہا پسندی کو قابو کرنے کے لیےاقوام عالم کو مشترکہ حکمت عملی اپنانا ہو گی،بلاول بھٹو کا کینیڈین فیملی کا واقعہ دہشتگردی قراردینے کا مطالبہ

اسلام آباد (نمائندہ نیوز ٹویو )چیئرمین پی پی پی بلاول بھٹو زرداری نے کینیڈا کے صوبے اونٹاریو کے شہر لندن میں اسلاموفوبیا کے تحت ہونے والے جان لیوا حملے کی مذمت کی ہے اور کہا ہے کہ ماں، بیٹا، بہو اور بیٹی سمیت چار افراد پر مشتمل تین نسلوں کو انتہاپسندی کے نظرئیے کے تحت موت کے حوالے کردینا ایک افسوس ناک سانحہ ہے دنیا بھر میں بڑھتی انتہاپسندی کو قابو کرنے کے لئے اقوام عالم کو مشترکہ حکمت عملی اپنانا ہوگی، مسلمان ہونے کی وجہ سے لاہور کے ایک خاندان کو سوچے سمجھے منصوبے کے تحت نشانہ بنانے والے دہشت گرد کے نظرئیے کا تدارک کرنا کینڈین حکومت کیلئے ایک امتحان ہے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے لاہور کے سلمان افضل اور ان کی ضعیف والدہ، مدیحہ سلمان اور یمنیٰ سلمان کے جاں بحق ہونے پر لواحقین سے اظہار افسوس کرتے ہو ئےحادثے میں زخمی ہونے والے کم سن فائز سلمان کی صحت یابی کے لئے نیک تمنائیں کا اظہار کیا ہے انہوں نے کہا کہ اسلاموفوبیا کے شکار نیتھانیئل ویلٹ مین نے سوچے سمجھے منصوبے کے تحت مسلم خاندان کو ٹرک سے کچل کر موت کے حوالے کیا کینڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو کا اسلاموفوبیا کے شکار افراد کے خلاف پیغام حوصلہ افزا ہے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے مطالبہ کیا کہ کینیڈین وزیراعظم  کوحملے کے مرتکب فرد کو دہشت گرد قرار دینا ہوگا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں