بجٹ 11جون کو پیش کیا جائےگا، دفاع کے لیے14سوارب،سبسڈیز کے لیے530ارب اورٹیکس آمدن 5820ارب رکھےجانےکی تجویز،

اسلام آباد(نمائندہ نیوز ٹو یو) آئندہ بجٹ میں دفاع کی مد میں1400ارب روپے سے زائد رقم رکھی جا ئے گی وفاقی بجٹ گیارہ جون کو پیش کیاجائےگا۔وفاقی بجٹ کا کل حجم آٹھ  ہزار ارب روپے کے قریب ہوگا بجٹ میں ٹیکس آمدن پانچ ہزارآٹھ سوبیس  ارب روپے بجٹ میں نان ٹیکس آمدن ایک ہزارچارسوبیس  ارب روپےرکھے جانے کی تجویز ہےوزارت خزانہ کے ذرا ئع کے مطابق آئندہ بجٹ میں قرضوں اور سود کی مد 3060اربروپے خرچ ہوںگے آئندہ مالی سال میں معاشی ترقی (شرح نمو)کا ہدف 4اعشاریہ8 رکھا جا ئے گاآئندہ سال معیشت کاحجم باون ہزارستاون ارب روپے تک پہنچ جائے گا،ذرائع کے مطابق بجٹ خسارہ دوہزارنوسوپندرہ  ارب روپے تک ہوسکتا ہے جبکہ سالانہ ترقیاتی پروگرام کی مدمیں نوسوارب روپے رکھیں جائں گے آئندہ بجٹ میں صوبوں کاترقیاتی بجٹ ایک ہزارارب روپےہوگاجبکہ سبسڈیز کی مد میں پانچ سوتیس  ارب روپے رکھے جاسکتےہیں بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں دس سے پندرہ فی صدا ضافے کی تجویز ہے بجٹ کی حتمی منظوری کا بینہ دے گی جس کے بعد وفاقی بجٹ پا رلیمنٹ میں پیش کیا جا ئےگا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں