بچوں کے ہاتھوں بچے کا قتل، دل دہلا دینے والا واقعہ

لاہور(نیوز ڈسک) لاہور میں دو بچوں کے ہاتھوں ایک اور بچے کے سفاکانہ قتل نے دل دہلا دیے۔ لاہور کے علاقے کاہنہ میں 8 اور 10 سال کے دو بچوں نے سفاکانہ تشدد کر کے 8 سال کے مبین کی جان لے لی۔لاہور پولیس نے بیان میں کہا ہے کہ 8 سالہ مبین کے قتل میں ملوث 2 ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا ہے، جن میں سے ایک 8 سالہ علی شیر ہے، اور دوسرا 10 سالہ زید، پولیس نے انکشاف کیا ہے کہ ان بچوں نے تلخ کلامی پر مبین کو بے دردی سے قتل کیا تھا۔یہ واقعہ 16 اپریل کو پیش آیا تھا، پولیس کا کہنا ہے کہ دونوں کم عمر ملزمان نے معمولی تلخ کلامی پر مبین کو اغوا کیا، اور پھر لے جا کر اینٹیں مار مار کر اسے قتل کیا، اس کے بعد لاش کھیتوں میں دبا دی۔پولیس کے مطابق گرفتار ملزمان نے دوران تفتیش اعتراف جرم کر لیا ہے، بچوں نے بتایا کہ ان کی اپنے دوست مبین کے ساتھ معمولی تلخ کلامی ہو گئی تھی، اس پر انھوں نے اسے اغوا کیا اور اینٹیں مار مار کر بے جان کر دیا۔یہ اندھے قتل کا کیس تھا، تاہم ایس ڈی پی او کاہنہ سرکل شیعب میمن کی سربراہی میں ایس ایچ او نشتر کالونی عبد الواحد اور ان کی ٹیم نے ملزمان کی رسائی حاصل کی، اور کیس حل کر لیا۔بچے کی گم شدگی کے بعد والد نے پولیس کو بتایا تھا کہ ان کا بیٹا مبین گھر سے نماز پڑھنے نکلا لیکن پھر نہ لوٹا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں