جعلی اوردوہرے ووٹوں کے خاتمے کے لیے الیکٹرونک ووٹنگ مشین ضروری,بابر اعوان

اسلام آباد (نمائندہ نیوز ٹویو) وزیرا عظم کے مشیر برا ئے پارلیمانی ا موربابر اعوان نے کہا ہے کہ جعلی ووٹوں کے خاتمے اور شفاف انتخابات کیلئے الیکٹرانک ووٹنگ ضروری ہے اپوزیشن جماعتیں ڈرتی ہیں کہ الیکڑونک ووٹوں سے دوہرے ووٹوں کا خا تمہ ہو گا انہوں نے الزام عائد کیا کہ اپوزیشن سے تعلق رکھنے والے کئی سایستدانوں اورا رکان پا رلیمنٹ نے اپنے اپنے حلقوں میں 30 سے 40 ہزار جعلی ووٹ درج کرا رکھے ہیں حکومت کا انتخابی اصلاحات پر موقف صاف اور وا ضح  ہے آئندہ انتخابات الیکٹرونک ووٹنگ کے ذریعے ہی ہوں گےبیرون ملک پاکستانیوں کو شریک اقتدار کرنے کیلئے قانون لا ئے ہیں حکومت اوورسیز پاکستانیوں کے ووٹ کے حق کو ڈی ریل نہیں ہونے دے گی۔ وزیراعظم کے مشیر برائے پارلیمانی امور ڈاکٹر بابر اعوان نےوزیر مملکت فرخ حبیب کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے رولز کے مطابق تحریکیں پیش کیں اورووٹنگ کیساتھ تحاریک پاس ہوئی، اپوزیشن نے 3 مرتبہ کورم کی نشاندہی کی، جبکہ کورم پورا تھا، پارلیمانی کمیٹیوں کا بائیکاٹ کس نے کیا ؟ ہم نے قواعد کے مطابق قومی اسمبلی میں بل منظور کیا بابر اعوان نے کہا کہ ووٹنگ مشینوں کے ذریعے انتخابات پر حکومت سنجیدہ جبکہ اپوزیشن خوفزدہ ہے، اوورسیز پاکستانی ملک کا اثاثہ ہیں، انہیں ووٹ کا حق دیا جانا چاہیئے، کہا گیا بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو پاکستان کے مسائل کا کیا ادراک ہوگا، کیا آپ کا اشارہ نواز شریف کی طرف تھا کیونکہ آج کل وہی بیرون ملک بیٹھے ہیں، نواز شریف تو بیرون ملک بیٹھ کر خطاب بھی کرتے ہیں مشیر برائے پارلیمانی امور بابر اعوان نے کہا کہ ہم مذاکرات کا دروازہ کسی جگہ بند نہیں کریں گے، این آر او تحریک انصاف کیلئے نو گو ایریا ہے، این آر او پر کسی صورت مذاکرات نہیں ہوسکتے۔

وزیر مملکت فرخ حبیب نے کہا کہ اپوزیشن والے بغل میں چھری رکھتے ہیں اور منہ پر میٹھے ہوتے ہیں، کسی ملک میں جمہوریت کی بنیاد ہی شفاف انتخابات ہوتے ہیں، بل ڈھائی سال سے پڑے تھے، اپوزیشن کو قانون سازی میں دلچسپی نہیں، شفاف انتخابات کیلئے الیکٹرونک ووٹنگ سسٹم ضروری ہے، ہر الیکشن کے بعد شور ہوتا ہے کہ دھاندلی ہوگئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں