خود کوجمہوری کہنےوالے فوج کو حکومت گرانے کا کہہ رہےہیں،تاثردیا گیا بٹن دباتےنیا پاکستان بن جا ئےگا،وزیراعظم عمران خان

اسلام آباد (نما ئندہ نیوزٹویو) وزیراعظم نے کہا ہے کہ خود کو جمہوری کہنے والے فوج سے کہہ رہے ہیں حکومت گرادو ان کی چوریاں سامنے آرہی ہیں اس لیے حکومت گرانے کے لیے دباوَ ڈال رہے ہیں۔ ملک میں ہر جگہ مافیاز بیٹھے ہیں جن کے خاتمے کے لیے ہماری جدوجہد جاری ہےان کی کوشش ہے حکومت فیل ہو یہ اپنے مفادات کیلئے کچھ بھی کرنے کو تیار ہیں یہ جدوجہد ہے قانون کی حکمرانی کی اور قانون کی حکمرانی سے ہی معاشرہ بدلتا ہے لودھراں ملتان شاہراہ کی بحالی کی تقریب سے وزیراعظم عمران خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جب ہم آئے تو پہلے ہفتے ہی شروع ہو گیا تھا کہ کدھر ہے نیا پاکستان، ہم نے ڈھائی سال بڑے صبر سے گزارے، ہمیں بڑے مشکل وقت سے گزرنا پڑا، ایسا تاثر پیدا کیا گیا کہ بٹن دباتے ہی نیا پاکستان بن جائے گا، اپوزیشن نے تو تنقید کرنی تھی، انہیں پتا تھا این آر او نہیں ملے گاجب تک این آراونہیں ملتا تنقید جاری رہے گی۔کوئی بھی معاشرہ جدوجہد کے بغیر بہتر نظام کی جانب نہیں جاسکتا۔ اسٹیٹس کو کے بینفشریز کبھی بھی فائدہ مند ثابت نہیں ہوسکتے۔ معاشرہ کوشش کے بغیرمعاشرہ ترقی نہیں کرسکتاانہوں نے کہا کہ آزادی ایک جدوجہد کا نام ہے، پاکستان کو بدلنے کیلئے بہت بڑی جدوجہد چل رہی ہے، پاکستان کی یہ جدوجہد مستقبل کیلئے بہت اہم ہے آزادی کی تحریک میں قائداعظم کو بھی مشکلات کا سامنا رہا لیکن قائداعظم نے آزادی کے لیے جدوجہد جاری رکھی 1947کےبعد ملکی نظام بدلنے کےلیے جدوجہد جاری ہےہم مشکل وقت سے نکل چکے اب پاکستان مسلسل ترقی کرے گا، مافیاز کا واحد مقصد اپنے مفادات کا تحفظ ہے، خوشحال ملک دیکھ لیں وہاں قانون کی حکمرانی ہےعمران خان نے کہا کہ کورونا کے دوران پاکستان نے بھارت سے بہتر اقدامات کیے، پہلا سال معاشی استحکام، دوسرا کورونا سے نمٹنے میں گزرا، بینکنگ نظام کو ٹھیک کرنے میں 2 سال لگے، سیمنٹ کی فروخت سب سےزیادہ بڑھ گئی، صنعتوں کو کھڑا کیا، کسانوں کو پیسے دے رہے ہیں، معیشت بہتر ہو رہی ہے، کسانوں کے لیے پیکج لا رہے ہیں۔

وزیراعظم نے مزید کہا کہ چین کے ساتھ سی پیک کے دوسرے فیز میں جا رہے ہیں حکومتی اقدامات سے آئی ٹی کی برآمدات بڑھ رہی ہیں، اب دولت میں اضافہ اور نوجوانوں کو نوکریاں دینے کا وقت ہے، بینکنگ نظام کی وجہ سے ہاؤسنگ سیکٹر اتنا ٹیک آف نہ کرسکا قبل ازیں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کہ لودھراں ملتان شاہراہ کی تعمیر سے سفر کا دورانیہ کم ہوجائے گا، شاہراہ کی اپ گریڈیشن سے بہاولپور، لودھراں، ملتان مستفید ہوں گے، شاہراہ کے ذریعے ملتان سے بہاولپور کا سفر صرف 45 منٹ میں ہوگا، منصوبے سے ملتان کا بہاولپور سے رابطہ آسان ہو جائے گاشاہ محمود قریشی نے کہا کہ وزیراعظم نے جنوبی پنجاب کیلئے تاریخی اقدامات اٹھائے، منصوبے سے جنوبی پنجاب کو بے پناہ فائدہ ہوگا، جنوبی پنجاب صوبہ بننے سے سیاسی استحکام ہوگا، جنوبی پنجاب تحریک انصاف کا قلعہ ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں