سپریم کورٹ ا حکاما ت ،مئیر راولپنڈی نےلوکل گورنمنٹ اجلاس بلا لیا،افسران میونسپل کار پوریشن دفاتر اور ہال کو تالے لگا کر غائب،نمائندوں نے گیٹ پر دھرنا دے دیا

راولپنڈی (نما ئندہ نیو ز ٹو یو) مئیر راولپنڈی سردار نسیم نےاور ڈپٹی مئیر چوہدری طارق نے سپریم کورٹ کے پنجاب میں بلدیاتی اداروں کی بحالی کےلیےدئیے جانے والے احکامات کی روشنی میں لوکل گورنمنٹ کا پہلا ا جلاس بلا لیا افسران میونسپل کارپوریشن کے دفاتر اور ہال پر تالے لگا کرغالب ہو گئےجس پربلدیاتی نمائندوں نے میونسپل آفس کے مرکزی گیٹ پر دھرنا دے دیا

مئیر راولپنڈی سردار نسیم احمد خان  نے کہا کہ سپریم کورٹ کے احکامات پر آج ہر حال میں عملدرآمد کرینگے میئر راولپنڈی سردار نسیم نے اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہو ئے کہا کہ سپریم کورٹ کے احکامات پر پنجاب میں بلدیاتی ادارے بحال کیے گئے دو روز قبل متعلقہ اداروں اور دفاتر کو ںوٹسز جاری کرنے کے باوجود دفاتر کو تالے لگائے گئے ہم اپنا اجلاس میونسپل کارپوریشن کے باہر کھلی جگہ پر کرینگے بلدیاتی اداروں کے دفاتر پر تالے ہیں ہم پر امن طریقے سے آئیں ہیں سپریم کورٹ کے احکامات کے مطابق ہم اپنا اجلاس کھلے جگہ پر کرینگے راولپنڈی شہر کے لاکھوں افراد کی نمائندگی چیئرمین اور میئر ڈپٹی میئر کرتے ہیں پنجاب حکومت نے سپریم کورٹ کے واضح فیصلے اور احکامات کی خلاف ورزی اور توہین عدالت کی چیف جسٹس نے کہا کہ آپ اپنا کام کریں تین دن پہلے اپنے اجلاس کے ایجنڈے پر ان سے دستخط کروائے کہ آج اجلاس ہو گایہ کیسا ظلم ہے کہ آج جناح ہال میں تالے لگائے گئے ہمیں اجلاس کرنا پڑا تو ہم زمین پر بیٹھ کر بھی کرینگےآپ کی یونین کونسلز بحال ہو چکی ہیں میئر راولپنڈی نے کہا کہ 25مارچ 2021 کے بعد انکے جتنے فیصلے ہیں اور جو فنڈز جاری کیئے وی بھی غیر قانونی ہیں خدارا ہوش کے ناخن کے آپ اپنے  اعلی افسران کو بتائیں کہ سپریم کورٹ کے احکامات کی خلاف ورزی کی جا رہی ہے توہین عدالت پرسپریم کورٹ نے حکومت پنجاب کو نوٹس جاری کر دیا ہے2019میں ایک ارب کے فنڈز تھے یہ حکومت جو بلدیاتی الیکشن نہیں کرانا چاہتی چا لیس فیصد ایم این اے کو اور 60 فیصد فنڈز ایم پی اے کو دئے جاتے ہیں ہزار بلدیاتی نمائندے ہیں جو بحال ہوئے ہیں 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں