سپریم کورٹ میں ٹک ٹاک پر پا بندی کے لیے درخواست دائر

اسلام آباد (نمائندہ نیوزٹویو)سپریم کورٹ میں ٹک ٹاک پر پابندی عائد کرنے کیلئے درخواست دائرکر دی گئی ہے درخواست گزاروں میا ں علی زیب بخش،بازل خان، فیض احمدخان ،ولید بن عامراور رانا ا بو بکر خان نے عدالت عظمیٰ سے درخواست میں استدعا کی ہے کہ حکومت کو مواد کو سینسر کرنے کیلئے مکینزم بنانے کا حکم دیا جائے ٹک ٹاک جرائم کو فروغ دینے کا باعث بن رہی ہے ٹک ٹاک پر لوگ منشیات اور اسلحہ استعمال کرتے ویڈیوز اپ لوڈ کرتے ہیں تعلیمی اداروں میں ٹک ٹاک کے استعمال سے ماحول خراب ہو رہا ہے اظہا ر را ئے کی آزادی کے نظریے کا غلط استعمال کیا جا رہاہے ٹک ٹاک پر ویوز لینے کیلئے لوگ خودکشی جیسے اقدامات کی ویڈیوز بھی بنا رہےدرخواست میں وفاق پا کستان، پا کستان ا لیکٹرونک میڈیا اینڈ ریگولیٹری ا تھارٹی، پا کستان ٹیلی کمیونیکشن ا تھا رٹی اوروازرت ا نفارمیشن ٹیکنالوجی کو فریق بنا یا گیا ہے درخواست گزار کا کہنا ہے کہ اس وقت پا کستان میں 3کروڑ 30 لو گ ٹک ٹاک کے پلیٹ فارم کو ا ستعمال کر رہے ہیں جبکہ انڈونیشا ، بنگلہ دیش او ر امریکہ سمیت کئی مما لک میں اس پر عارضی پا بندی کی جا چکی ہے درخواست گزار نے ا ستدعا کی ہے کہ جب تک ٹک ٹاک کمپنی اپنی پالیسی پر نظر ثانی نہ کر لے اس وقت تک اس پر عارضی پا بندی عائد کی جا ئے ٹک ٹاک پر جو مواد اپ لوڈ کیا جا رہا ہے وہ نہ صرف معاشرے کی خرابی کا باعث بن رہا ہے بلکہ قرآن وسنت کے بھی خلاف ہے   

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں