سپریم کورٹ نے پنجاب حکومت سے سا نحہ سا ہیوا ل سے متعلق رپورٹ طلب کر لی

 اسلام آباد(نیوزٹویو)سپریم کورٹ نے پنجاب حکومت سے سانحہ ساہیوال سے متعلق رپورٹ طلب کر لی سپریم کورٹ نے حکم جاری کیا ہے کہ ایڈیشنل پراسیکوٹر جنرل پنجاب سانحہ ساہیوال سے متعلق جواب جمع کرائیں عدالت عظمیٰ نے یہ رپورٹ سانخہ سا ہیوال کے قتل کے ملزم پولیس اہلکار حافظ محمد عثمان کی ضمانت کے کیس میں جواب کے ساتھ  طلب کی ہے کیس کی سماعت جسٹس قا ضی فائز عیسٰی اور جسٹس یحٰیی پر مشتمل دورکنی بنچ نے کی سماعت کے دوران جسٹس قاضی فائز عیسی نے ایڈیشنل پراسیکیوٹر جنرل پنجاب سے استفسا رکیا کہ سانحہ ساہیوال کا کیا بن ساہیوال میں معصوم بچوں کو مار دیا گیا صرف ایک فون کال پر بے گناہ لوگوں کو مار دیا گیا سمجھ نہیں آتا پنجاب حکومت اور پولیس کیا کر رہی ہےمعصوم شہریوں کے قاتلوں سے کوئی پوچھنے والا نہیں ہے بتائیں سانحہ ساہیوال میں پنجاب حکومت نے کیا کیا  ایڈیشنل پراسیکیوٹر جنرل پنجاب عابد مجید مرزا نے جواب دیا کہ میرے خیال میں کیس ہائیکورٹ میں زیر التوا ہے اس پر جسٹس قا ضی فا ئز عیسیٰ نے کہا کہ سانحہ ساہیوال سے متعلق معلومات لیکر جواب جمع کرائیں عدالت نے قتل کے ملزم سپاہی حافظ محمد عثمان کی ضمانت منظور کر لی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں