مسلمان نہ ہونے کے باوجود میں نے کبھی مختصر لباس پہننے کو ترجیح نہیں دی: سنیتا مارشل

کراچی:اداکارہ و ماڈل سنیتا مارشل نے کہا ہے کہ میں مسلمان نہیں ہوں لیکن میں نے کبھی مختصر لباس پہننے کو ترجیح نہیں بلکہ میری کوشش رہی ہے کہ پاکستانی ثقافت کے مطابق زیب تن کروں۔ اداکارہ سنیتا مارشل کا شمار پاکستان شوبز انڈسٹری کی خوبصورت اور تہذیب یافتہ اداکاراؤں میں ہوتا ہے۔ کرسچن مذہب سے تعلق رکھتی ہیں۔ ایک انٹرویو کے دوران پاکستان میں سوشل میڈیا پر فالوورز کی دوڑ اور پاکستانی کلچر کے بارے میں بات کی۔ سنیتا مارشل نے کہا آج کل ہمارے یہاں ایک ریس لگی ہوئی ہے کہ کس اداکار کے انسٹاگرام پر فالوورز کتنے زیادہ ہیں اور اس ریس نے بہت سے لوگوں کومتاثر کیا ہے۔ سوشل میڈیا فالوورزوالے نئے اداکار اکثر اپنے حدود کی تجاوز کر جاتے ہیں جب کہ حقیقت میں وہ ایسے بالکل نہیں ہوتے جیسا وہ سوشل میڈیا پر نظر آتے ہیں۔ سنیتا مارشل نے کہا آپ پاکستان میں رہتے ہیں ۔مجھے جب بھی فیشن شوز کے دوران مختصر لباس پہننے کا کہا جائے میں ہمیشیہ منع کر دیتی ہوں کیونکہ مجھے مختصر لباس پہننا نہیں پسند اور میں کہتی تھی کہ آپ نے مجھے شو میں لینا ہے لیں نہیں لینا نہ لیں لیکن مجھ سے ایسی ڈیماندز کی توقع نہ کیا کریں۔ اب کی ماڈلز نہ کہتے ہوئے ڈؑرتی ہیں میں انسے کہتی ہوں کہ آپ اپنے اندر خوداعتمادی پیدا کریں تاکہ آپ سامنے والے کو نا کہہ سکیں۔  میرے ساتھ ج تک ایسا کوئی واقعہ نہیں پیش آیا میں شروع سے ہی بہت کام سے کام رکھنے والی لڑکی ہوں اور میرے رویہ سے ہی سب یہ بات جان جاتے ہیں اور میں ویسے بھی زیادہ بات کرنا پسند نہیں کرتی۔

 

    

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں