نجی ہاوسنگ اسکیم کیس میں متبادل سائیٹ پلان پر ایڈووکیٹ جنرل پنجاب اورراوی اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی پنجاب کو نوٹسز جاری

اسلام آباد(نمائندہ نیوز ٹویو) سپریم کورٹ نے نجی ہاوسنگ اسکیم (ایڈن گارڈن) کیس میں متبادل سائیٹ پلان پر ایڈووکیٹ جنرل پنجاب اورراوی اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی پنجاب کو نوٹسز جاری کر دیے جسٹس اعجاز الااحسن کی سربراہی میں دو رکنی  بینچ نے کیس کی سماعت کی عدالت نے نجی ہاوسنگ اسکیم کو ڈی ایچ اے کو مکمل کرنے کے لیے 6 سال دیےمہلت کے دو سال گزرنے کے بعد اب دوبارہ سکوائر ون پر آ گئے ہیں عدالت نے متاثرین کے حقوق کا تحفظ کرنا ہےڈی ایچ اے کے وکیل نے بتایا کہ نجی ہاوسنگ کی نئی سائیٹ ڈی ایچ اے سے منسلک ہےنئی سائیٹ 6 سال میں ڈیویلپ کرکے متاثرین کو پلاٹ دے دیں گےجسٹس اعجاز الااحسن نے سوال کیا کہ کیا گارنٹی ہے دو سال میں اسکیم کے لیے زمین خرید لی جائے گی پرائیویٹ لوگ معلوم نہیں اپنی زمین فروخت کرتے ہے یا نہیں نئی سائٹ کا کوئی نقشہ،یا سروے کرایا گیا ڈی ایچ اے کے وکیل نے بتایا کہ سائیٹ پلان کو پبلک کیا تو مالکان زمین کی قیمت بڑھا دیں گےایل ڈی اے کے وکیل نے بتایا کہ راوی اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی کاقانون پاس ہونے کے بعد معاملات سے ایل ڈی اے کا تعلق نہیں رہا جسٹس اعجاز الااحسن  نے کہا کہ نجی ہاوسنگ اسکیم کے گیارہ ہزار سے زائد متاثرین ہیں پنجاب حکومت اور راوی اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی کو نوٹس جاری کر رہے ہیں پنجاب حکومت، راوی اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی کو سن کے مناسب فیصلہ کریں گے عدالت نے کیس کی سماعت ایک ماہ تک ملتوی کردی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں