وزیراعظم،چیف جسٹس آف پا کستان،آرمی چیف بحریہ ٹاون پر حملے کے واقعہ کا نوٹس لیں،اسٹیک ہولڈرز کی پریس کا نفرنس

راولپنڈی (نمائندہ نیوز ٹو یو) بحریہ ٹاون راولپنڈی کے اسٹیک ہولڈرپراپرٹی ڈیلرز خرم لطیف، مبشر حیات و دیگر نے پریس کانفرنس میں بحریہ ٹاؤن کراچی کے واقعہ کی پرزور مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بڑی مشکل سے رئیل اسٹیٹ کی مارکیٹ میں بہتری نظر آنے لگی تھی ایسے میں بحریہ ٹاؤن کراچی پر حملہ کرکے کچھ لوگوں نے ملکی معیشت پر حملہ کردیا واضح کرتے ہیں سیاسی گروپس نے اچھا نہیں کیا، اس واقعہ کے پیچھے ایک مخصوص ایجنڈا ہے،جو ذمہ دار ہیں انکے خلاف ایکشن ہونا چاہیئے،جہاں واقعہ ہوا کیا وہاں کے سب لوگ سندھی نہیں ہیں سندھ میں باہر سے آکر کوئی کاروبار نہیں کرسکتا یہ کیسی سوچ ہے باہر سے آنے والے انویسٹرز کو بہت بڑا دھچکا لگا ہے۔ سندھ حکومت اس واقع کے ذمہ داران کے خلاف کارروائی کرےبحریہ ٹاؤن نے کراچی کے گھوٹوں میں ترقیاتی منصوبہ دیا،بعدازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ فواد بشیر، رانا احسن و دیگرنے کہا کہ کراچی میں حملہ بحریہ ٹاؤن، ڈیلرز پر ہی نہیں بلکہ پاکستانی خواہ وہ ملک میں ہوں یا بیرون ملک کا انوسٹر وہ بھی بری طرح سے متاثر ہوا ہے جس سے ملکی معیشت بھی متاثر ہوئی ہے۔ ہماری اپیل ہے کہ وزیراعظم ، آرمی چیف اور چیف جسٹس اف پاکستان اس واقعہ کا سختی سے نوٹس لیں۔ تمام اسٹیک ہولڈرز ملک ریاض کے ساتھ ہیں۔مطالبہ کرتے ہیں ان ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچا کر نشان عبرت بنایا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں