وزیرخزانہ بجٹ پیش کررہے ہیں، اپوزیشن کا شدیدشورشرابا اور نعرے بازی

اسلام آباد ( نمائندہ نیو ز ٹویو) وفاقی وزیرخزانہ شوکت ترین پا رلیمنٹ میں بجٹ پیش کررہے ہیں جبکہ اپوزیشن ان کی تقریر کے دوران اپوزیشن کا شدید شورشرابا جاری ہے اپوزیشن ارکان سپیکر ڈائس کے قریب ا کھٹے ہو کر نعرے بازی کررہے ہیں دوسری طرف وزیرخزانہ کا بجٹ پیش کرتے ہو ئے کہنا ہے پا کستان میں فی کس آمدنی میں 15فیصد ا ضا فہ ہو اہے وزیرخزانہ نے کہا، بجٹ پیش کرنا میرے لیے اعزاز کی بات ہے، ہمیں مشکل حالات میں حکومت ملی، ریزرو کی صورتحال کے پیش نظر ملک دیوالیہ ہونے کے قریب تھا۔چینی اورخوردنی تیل کی قیمتوں میں ا ضا فہ عالمی ما رکیٹ میں ان ا شیئا کی قیمتوں میں ا ضا فے کی و جہ سے ہوا ہے  ان کا کہنا ہے کہ ہمیں اجنا س کی قیمتوں میں ا ستحکا م لا نے کے لیے زراعت پر تو جہ دیں گے ملکی قرضوں میں کمی آنا شروع ہو گئی ہے آئندہ سال معا شی نمو کا ہدف چار 4اعشاریہ8آٹھ رکھا ہے ہمارے ہاں کبھی بھی غریب عوام کے خواب پورے نہیں ہو ئے لو کاسٹ ہا وسنگ کی مد میں 30 لا کھ تک ہر گھرانے کو قرضے دئیے جا ئینگے ہر گھرانے کو صحت کا رڈ دیا جا ئے گا اورہر گھر میں ایک فرد کو  ہنر مندی کی تربیت دی جا ئے گی یہ وزیراعظم کی مدینہ کی  ریا ست کا بنیادی تقا ضا ہے اس بجٹ میں کئی سیکٹر میں مراعات کا اعلان کررہے ہیں روز گار کے مواقع پیدا کیے جا ئینگے اور برآمدات میں فروغ کے ا قدا ما ت کیے جا ئینگے تعمیراتی شعبے سہولیات کا ا علان کیا گیا ہے بینکوں کو گھروں کے قرضوں کے لیے 100 ارب روپے کی درخواستیں مو صول ہو ئی ہیں جس میں سے 70 ارب روپے کے قرضوں کی منظوری دی جا چکی ہے   

احسا س پروگرام کے 260 ارب روپے تجویز کیے گئے ہیں گردشی قرضوں کو ختم کرنے کے لیے منصوبہ بندی کی گئی ہے بجلی کی کا روں کئے استعما لے لیے ا لیکڑیکل وہیکل پا لیسی لا رہے ہیں ترقیا تی بجٹ میں 40 فی صد کا ا ضا فہ کیا جا رہا ہے اسے بڑھا کر 900 ارب روپے کیا گیا ہے تنخواہوں او ردیگر مراعات کی مد میں 160 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں