کالعدم تحریک طالبان سے متعلق افغانستان کا بیان مسترد،افغانستان میں ٹی ٹی پی کے 5ہزار دہشتگردہیں،ترجمان دفترخارجہ

 اسلام آباد (نمائندہ نیوزٹو یو)پاکستان نے افغان وزارت خارجہ کا کالعدم ٹی ٹی پی کی افغانستان میں سرگرمیوں بارے بیان مسترد کر دیا ہےدفترخارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ افغان بیان بازی زمینی حقائق، متعدد اقوام متحدہ رپورٹس کے بالکل برعکس ہےاقوام متحدہ کی رپورٹس کے مطابق افغان سرزمین پر ٹی ٹی پی کے 5 ہزار دہشتگرد موجود ہیں سوموار کو اپنے بیان میں دفترخارجہ کے ترجمان نے کہا کہ گزشتہ کئی سالوں میں ٹی ٹی پی نے پاکستان میں کئی دہشتگرد حملے کیے ہیں پاکستان میں دہشتگردی کے لیے ٹی ٹی پی نے افغان سرزمین استعمال کی ہے اقوام متحدہ مانیٹرنگ ٹیم کی بارہویں رپورٹ نے ٹی ٹی پی کے پاکستان مخالف مخصوص مقاصد تسلیم کیےہیں رپورٹ میں  نشاندہی کی گئی ہے کہ ٹی ٹی پی کے ٹھکانے افغانستان میں پاکستانی سرحد کے ساتھ ہیں ترجمان نے کہا ہے کہ ٹی ٹی پی کے منقسم دھڑوں کا دوبارہ اتحاد بھی دشمن انٹیلی جینس ایجنسیوں کا کام ہےپاکستان کے خلاف سرحد پار سے حملے ہماری سلامتی اور استحکام کے لیے خطرہ ہیںپاکستان ہر قسم کی دہشتگردی کے خلاف بلاتفریق کارروائی کا عزم غیرمتزلزل ہےپاکستان نے سلامتی، دہشتگردی جیسے امور سے نمٹنے کیلئے ہمیشہ موثر اقدامات پر زور دیاباہمی مسائل کے حل کے لیے افغان، پاکستان حکمت عملی برائے امن و ہم آہنگی پر عملدرآمد ناگزیر ہے پاکستان بین الافغان امن عمل کی کامیابی کے لیے مخلصانہ کاوشیں کر رہا ہےامید ہے افغانستان میں دیرپا امن و استحکام کی خاطر افغان نادر موقع سے فائدہ اٹھائیں گے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں