اسلام آبادچڑیاگھر کی زمین ہتھیانےکے لیےسازش سےجانوروں کومارا گیا،آل پا کستان انجمن تاجران

اسلام آباد (نیوزٹویو)آل پاکستان انجمن تاجران اور ٹریڈرز ایکشن کمیٹی اسلام آباد کے صدر اجمل بلوچ نےانکشاف کیا ہے وفاقی دارلحکومت میں چڑیا گھر کی زمین ہتھیانے کے لیے ایک سازش کے تحت جانوروں کو مروایا گیا ہے اورعدالت کو گمراہ کیا گیا جبکہ انجمن تاجران کےسیکریٹری خالد چوہدری نے کہا ہے کہ چڑیا گھر کسی بھی شہر کے بچوں کے لئے بہت زیادہ اہمیت کا حامل ہوتا ہے جبکہ اسلام آباد کا چڑیا گھر ایک سازش کے ذریعے اور عدالت کو مس گائیڈ کر کے ختم کر دیا گیا، شیروں کو مار دیا گیا اور زیادہ تر جانور چوری کر لئے گئے یہ سب کچھ ایک این جی او کے لیے کیا گیا۔ چڑیا گھر بچوں کے لئے صرف تفریح مہیا نہیں کرتا بلکہ بچوں کی بنیادی تعلیم کے لیے ضروری ہوتا ہے۔ ہائیکورٹ کے حکم پر جانور مارنے کی تھانہ کوہسار میں ایف آئی آر درج کی گئی لیکن ان ذمہ داران کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی، بلکہ چڑیا گھر کی زمین ہتھیانے کی کوشش ہورہی ہے جس کی قیمت اربوں روپے ہے۔ ہائیکورٹ نے چڑیا گھر کے انتظامات وزارت موسمیاتی تبدیلی کو دیے تھے اس لئے زمین کا کوئی ذکر نہیں ہے اور این جی او کو وزارت نے قبضہ دے دیا ہے۔ سی ڈی اے اس زمین کا مالک ہے اسلام آباد کے شہری اس کرپشن اور بے قاعدگی کو بے نقاب کریں گے۔ جن لوگوں کے خلاف ایف آئی آر درج ہے انہوں نے زمین کے مالک سی ڈی اے افسران کے خلاف غیر قانونی تعمیرات کے خلاف ایکشن لینے پر ایف آئی آر کی درخواست دی ہے جو کہ زیادتی ہے نیب چیئرمین فوری طور پر زبردستی زمین ہتھیانے اور چڑیا گھر کو ختم کرنے کی انکوائری کروائیں اور ذمہ داران کے خلاف ایکشن لیا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں