الیکشن میں اگر ڈسکہ والی دھاندلی نہ ہوئی تو نتائج ہمارے حق میں ہوں گے، خواجہ سعد رفیق

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) مسلم لیگ نون کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق کا کہنا ہے کہ آزاد کشمیر کے الیکشن میں اگر ڈسکہ والی دھاندلی نہ ہوئی تو نتائج نون لیگ کے حق میں ہوں گے۔ لاہور کی احتساب عدالت کے باہر مسلم لیگ نون کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق نے اپنے بھائی خواجہ سلمان رفیق کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کشمیری ووٹر بڑا باشعور ہے۔ وہ ایسی غلطی نہیں کریں گے جو 2018ء میں کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ مہنگائی کا جن مکمل بے قابو ہو چکا ہے۔ جو بجٹ پیش کیا گیا مکمل فیل بجٹ ہے۔ مسلم لیگ نون کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر کا مزید کہنا ہے کہ یہ آئی ایم ایف کی ڈکٹیشن کے مطابق پاکستان کو چلانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ خواجہ سعد رفیق نے یہ بھی کہا کہ جب بھی عوام میں جانے کا وقت آئے گا لوگ پی ٹی آئی کو بری طرح مسترد کر دیں گے۔ اس موقع پر ان کے بھائی خواجہ سلمان رفیق نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ محکمۂ صحت بری طرح ناکام ہو چکا ہے۔ کورونا ویکسی نیشن کے حوالے سے فنڈز کے باوجود مناسب انتظام نہیں کیا گیا۔ ویکسین کبھی ملتی ہے اور کبھی ختم ہو جاتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ڈینگی کے مریض بھی سامنے آ رہے ہیں۔ اس حوالے سے جو کام ہونا چاہیئے تھا وہ نہیں کیا گیا۔ 3 سال میں پنجاب کے اسپتالوں میں ایک بیڈ کا بھی اضافہ نہیں کیا گیا۔ خواجہ سلمان رفیق نے یہ بھی کہا کہ ادویات کی قیمت میں 11 مرتبہ اضافہ کیا گیا ہے جس سے عام آدمی کی زندگی تنگ ہو گئی۔ حکومت باقی شعبوں کی طرح شعبۂ صحت میں بھی بری طرح ناکام ہو چکی ہے۔ ترجمان پاکستان مسلم لیگ نون مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ کشمیری عوام ڈسکہ کی دھند بننے دیں گے نہ ووٹ یا الیکشن عملہ اغوا کرنے دیں گے۔ آزاد کشمیر کا ہر شہری نہ صرف ووٹ دے گا، بلکہ ووٹ کی حفاظت بھی کرے گا۔ آزاد جموں و کشمیر الیکشن سے متعلق بیان دیتے ہوئے ترجمان پاکستان مسلم لیگ نون مریم اورنگزیب نے کہا کہ ووٹ چوری کوشش ناکام بنانے کیلئے بھرپور نگرانی ہوگی۔ انتخابات کے دن نگرانی کے لئے مبصر ٹیمیں بنادی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں