ایف بی آر نے کسٹمز ایکٹ کی ترامیم پر قوانین بنانے کے لئے کمیٹی تشکیل دے دی

اسلام آباد (نمائندہ نیوزٹویو) فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے کسٹمز ہاؤس کراچی کے سینیئر افسران پر مشتمل کمیٹی تشکیل دے دی ہے جو کہ فنانس ایکٹ 2021 کے تحت کسٹمز ایکٹ 1969 کی ترمیم شدہ شق پر عمل درآمد کے لئے قوانین مرتب کرے گی۔ قانون کی مذکورہ شق گڈز ڈیکلیریشن  کے ساتھ لازمی کاغذات منسلک نہ کرنے  اور کنٹینر کے اندر پیکنگ لسٹ اور انوائس نہ رکھے جانے کے خلاف سزا تجویز کرتی ہے۔کمیٹی قوانین مرتب کرے گی اور انوائس اور پیکنگ لسٹ نہ ہونے پر تجویز کردہ سزا کو متعین کرے گی۔ کمیٹی مختلف اقسام کے گڈز ڈیکلریشن کی نشاندہی کرے گی اور گڈز ڈیکلیریشن کے ساتھ ضروری کاغذات کو منسلک کرنے کی بھی نشاندہی کرے گی۔ایف بی آر نے وضاحت کی ہے کہ قوانین جلد مرتب کر لئے جائیں گے اور جب تک قوانین مرتب نہیں ہوتے کوئی بھی تادیبی کاروائی  نہیں کی جائے گی۔ ایف بی آر نے تاجر تنظیموں کو یقین دہانی کرائی ہے کہ  یہ قانونی شقیں قوانین مرتب ہونے کے بعد ہی قابل عمل ہوں گی۔ کسٹمز فیلڈ فارمیشنز قوانین کے مرتب ہونے تک پرانے طریقے سے معاملات چلائیں گی۔ ایف بی آر نے مزید کہا ہے کہ کمیٹی کی طرف سے قوانین کو مرتب کرنے کے بعد ایف بی آر کی ویب سائٹ پر اپلوڈ کر دی جائے گی تا کہ اس پر عمل درآمد سے پہلے تمام سٹیک ہولڈرز کی آراء حاصل کر لی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں