ای الیون میں برساتی نالوں پر تجاوزات کا خاتمہ،ڈی سی کو1ہفتہ میں پلان تیار کرنے کی ہدایت

اسلام آباد(نیوزٹویو)وفاقی وزیرمنصوبہ بندی اسد عمرنے کہا ہے کہ اسلام آباد کے سیکٹرای الیون کے برساتی نالوں پر قائم  تعمیرات اور تمام غیر قانونی تجاوزات  مسمار کرنے کے لیے  جلد اپریشن شروع کر دیا جائے گاوفاقی وزیربرائے  منصوبہ بندی ، ترقی اورخصوصی اقدامات اسد عمر نے اسلام آباد کے سیکٹر ای الیون کے برساتی نالوں پر قائم  تمام قانونی اور غیرقانونی تجاوزات ، اور ہاوسنگ سوسائیٹیز کے دیگر مسائل اور انکے حل سے متعلق اجلا س کی صدارت کی ۔ اجلاس میں مینجنگ ڈائریکٹر نیشنل پولیس فاونڈیشن ، چیف ایگزیکٹو اسلام آباد الیکٹرک سپلائی کمپنی (آئیسکو) ، ڈپٹی کمشنر اسلام آباد اور دیگر معززین نے شرکت کی۔

ڈپٹی کمشنر اسلام آباد نے اجلاس  کو آگاہ کیا کہ سیکٹر ای الیون کی بیشتر رہائشی سوسائیٹیز نے  برساتی نالوں پر غیر قانونی تجاوزات تعمیر کی ہوئی ہیں جس کی وجہ سے بارش کے پانی کے بہاو میں رکاوٹوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ ڈپٹی کمشنر نے مزید بتایا کہ ان سوسائیٹیز نے گرین بیلٹ اور پارکس پر بھی ناجائز تعمیرات کی ہوئی ہیں وفاقی وزیرنے ڈپٹی کمشنر اسلام آباد کو ہدایت دی کہ سیکٹر ای الیون کے تمام برساتی نالوں پر قائم قانونی اور غیر قانونی تعمیرات کا تعین کر کے اگلے ہفتہ تک ایک باقاعدہ پلان تیار کیا جائے تاکہ جلد از جلد باقاعدہ ایک شیڈول کے مطابق  تجاوزات کو  مسمار کرنے کا کام شروع کیا جا سکے۔ انھوں نے کہا  کہ جب تک برساتی نالوں پر تجاوزات مسمار نہیں کی جائیں گی بر سال برسات  کے موسم میں سیلاب آنے اور علاقہ مکینوں کی جانوں کو خطرہ لاحق رہے گا۔ اس کے علاوہ اجلاس میں نیشنل پولیس فاونڈیشن ہاوسنگ سوسائیٹی اور آئیسکو کے مابین جاری تنازعات اور ان کے حل پر بھی  تفصیلاً بات چیت کی گئی ۔ ایم ڈی نیشنل پولیس فاونڈیشن کا کہنا تھا کہ نیشنل پولیس فاونڈیشن سوسائیٹی کے مکین بجلی کی لوڈشیڈنگ کی وجہ سے  شدید مشکلات کا سامنا کر رہے ہیں ، ان کی بجلی کی ڈیمانڈ اب 3.5 میگاواٹ سے تجاوز کر گئی ہے لہذا آئیسکو نیا فیڈر نصب کرے،اور تمام  ٹرانسمیشن لائینزاور ٹرانسفارمرز کو اپ گریڈ کیا جائے ۔ جبکہ سی ڈی اے سکیٹرای الیون کے علاقہ مکینوں کے لیے قریب ترین قبرستان کے لیے جگہ کا تعین کرےاور بچوں کے لیے پارکس اور پلے گرونڈز بھی مہیا کیے جائیں ۔اسد عمر نے آئیسکو کو  نیشنل پولیس فاونڈیشن کے علاقہ مکینوں کو بجلی کی فراہمی اور دیگر سیکٹرز میں  بجلی کے میٹر  نصب کرنے جیسے مسائل کو بھی فوری طور پر حل کرنے کی ہدایت کی۔ نیز سی ڈی اے کو جلد از جلد ای الیون سیکٹر کے لیے قبرستان کی جگہ کا تعین کرنے اور گرین بیلٹس ار گراونڈز پر تعمیر کی گئی تجاوازت کو شناخت کرنے اور ان پر ایکشن لینے کا  حکم دیا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں