جوڑا تشدد کیس، لڑکے اور لڑکی کا بیان قلم بند

اسلام آباد ( ملک نجیب ) وفاقی دارالحکومت کے تھانہ گولڑہ کی حدود میں لڑکے اور لڑکی کو برہننہ کر کے تشدد کرنے کے کیس میں وفاقی پولیس نے اہم پیش رفت کی ہے ۔ پولیس نے متاثرہ فریقین کو ڈھونڈ کر کیس کو منطقی انجام تک پہنچانے کے لئے دونوں لڑکا لڑکی کو ساتھ دینے پر آمادہ کر لیا ہے ۔ دونوں کی جانب سے پولیس کے ساتھ مکمل تعاون کی یقین دہانی کرائی گئی ہے ۔ پولیس نے دونوں کا بیان قلمبند کر لیا ہے ۔ دوسری جانب جوڈیشل مجسٹریٹ وقار حسین گوندل نے کیس کے مرکزی ملزم عثمان مرزا کو چار روز جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا ہے جبکہ آئی جی اسلام آباد جمیل الرحمن قاضی نے وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی ہے اور کیس کے متعلق تفصیلی بریفنگ دی ہے ۔ وزیر اعظم تمام تر وسائل کو بروئے کار لاتے ہوئے ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچانے کی ہدایت کی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق ایس ایس پی انویسٹی گیشن عطاالرحمن نے تھانہ گولڑہ کی حدود میں مسلح افراد کے ہاتھوں تشدد کا نشانہ بننے والے لڑکے اور لڑکی سے ملاقات کی ہے ، لڑکے اور لڑکی کی جانب سے ایس ایس پی کو بتایا گیا کہ وہ انٹرویو دینے کے لئے اسلام آباد آئے تھے اور رات کو اسلام آباد کے علاقے ای الیون کے ایک فلیٹ میں ٹھہرے ہوئے تھے کہ عثمان مرزا اور دیگر ملزمان فلیٹ میں داخل ہوئے اور انہیں تشدد کا نشانہ بنایا اس وقت دونوں منگیتر تھے لیکن اب انہوں نے شادی کر لی ہے ۔ ایس ایس پی کی جانب سے دونوں کو یقین دہانی کرائی گئی کہ اگر وہ پولیس کا ساتھ دیں تو پولیس کی جانب سے اس کیس کو منطقی انجام تک پہنچایا جا سکتا ہے ۔ ایس ایس پی نے کہا کہ اس وقت پولیس ، وزیر اعظم اور پوری قوم دونوں کے ساتھ ہے اس کیس کو مثال بنانا ہے اور پولیس دونوں متاثرین کو تحفظ بھی فراہم کرے گی تا کہ کسی قسم کا دبائو نہ ڈالا جا سکے ۔ ایس ایس پی کی یقین دہانی پر دونوں لڑکے اور لڑکی نے پولیس کے ساتھ مکمل تعاون کی حامی بھر لی ہے جس پر پولیس نے دونوں کا بیان ریکارڈ کر لیا ہے ۔ دوسری جانب پولیس نے عثمان مرزا کو جوڈیشل مجسٹریٹ وقار حسین گوندل کی عدالت میں پیش کر کے استدعا کی کہ ملزم سے واردات میں استعمال ہونے ولا موبائل فون برآمد کرنا ہے جس پر عدالت نے ملزم عثمان مرزا کو چار روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا ہے تاہم پولیس کی جانب سے ویڈیوز میں دیکھے جانے والے دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لئے چھاپے مارے جا رہے ہیں ۔ پولیس کے مطابق دیگر ملزمان بھی جلد قانون کی گرفت میں ہوں گے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں