سول سوسائٹی کی امریکہ کوفضا ئی اڈوں کی سہولت دینے کے خلاف ہائیکورٹ میں درخواست

اسلام آباد(نیوزٹویو)سول سوسائٹی نے افغانستان پر کنٹرول کیلئے پاکستان کی طرف سے امریکہ کوہوائی اڈوں سمیت جسی بھی قسم کی سہولت دینے کے خلاف اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع کرلیا۔محمد طاہر کی طرف سے دائر درخواست میں پرسنل سیکرٹری ٹووزیراعظم، وزارت خارجہ سیکرٹری دفاع اور دیگر کو فریق بناتے ہوئے کہا گیا ہے کہ افغانستان سے 90فیصد امریکی فوجوں کے انخلاء کے بعد پاکستان کے بغیر وہاں اپنا کنٹرول قائم نہیں رکھ سکتا، پاکستان کی مدد اور پارٹنر شپ کے بغیراپنے مقاصد بھی پورے نہیں کرسکتا، مکمل انخلاء سے قبل ہی پیٹاگون نے کہاکہ پاکستان نے امریکی فوج کو افغانستان میں موجودگی برقرار رکھنے کیلئے فضائی و زمینی راستوں کی فراہمی کیلئے حامی بھری ہے جبکہ ان کو پیسیفک کیلئے اسسٹنٹ سیکرٹری دفاع ڈیوڈ ایف ہیلوی امیریکی سینیٹ کی آرمڈفورسز کمیٹی میں کہاکہ اس ضمن میں پاکستان کے ساتھ بات چیت جاری ہے،جو افغانستان میں قیام امن کیلئے اہم کردار ادا کر سکتا ہے، استدعا ہے کہ حکومت کو طالبان کے کے خلاف فضائی و زمینی راستوں کا استعمال کرنے کی اجازت نہ دینے اور اس کیلئے عدالت میں بیان حلفی جمع کرانے کی ہدایت کی جائے اور اس ضمن می. حکومت کو کسی بھی قسم کو بیان بازی سے بھی روکا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں