عام انتخابات کسی بھی وقت ہو سکتے ہیں کارکن اختلافات بھلا کر تیا ری کریں،بلاول بھٹو

کراچی (نیوزٹویو)پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ  ملک میں عام انتخابات وقت سے پہلے ہو سکتے ہیں کارکن تیاریاں مکمل رکھیں اپنے اختلافات بھلا دیں وزیراعلیٰ ہاؤس کراچی میں منعقدہ اعلیٰ سطحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں ںے کہا کہ افغانستان کی صورتحال کے اثرات پاکستان پر مرتب ہوں گے اور سب سے زیادہ کراچی متاثر ہو گا۔افغانستان کی صورتحال کے باعث حکومت سندھ اقدامات کررہی ہے۔ انہوں ںے دعویٰ کیا کہ صورتحال سے نمٹنے کے لیے ایک لائحہ عمل بھی طے کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں چاہتا ہوں کہ جلد از جلد تنظیم سازی مکمل کی جائے۔ایم کیو ایم کے دہشت گردوں کا راج ختم ہو چکا ہے لیکن پی ٹی آئی کی شکل میں نئی ایم کیو ایم سامنے آئی ہے۔ کراچی سے لے کر کشمیر تک سلیکٹڈ کو بھگائیں گےانہوں نے کہا کہ کراچی میں پانی کا مسئلہ بہت اہم ہے، صوبہ سندھ کو پانی کا حق نہیں دیا جاتا، ارسا اپنا رول ادا نہیں کرتا، عمران خان نے کراچی میں ڈی سالنیشن پلانٹ کا وعدہ کیا تھا۔ سندھ کو این ایف سی ایوارڈ کا حق نہیں دیا جاتا۔بلاول بھٹو نے کہا کہ ہم نے وفاق اور ایم کیو ایم کا مقابلہ کیا۔ کراچی میں بھی پی ٹی آئی کو ٹف ٹائم دے رہے ہیں۔ کراچی کو صرف پیپلز پارٹی ہی بچا سکتی ہے، ہمیں ایک ہو کر آگے بڑھنا ہوگا۔انہوں نے کارکنوں سے کہا کہ کراچی سے آپ نے بدمعاشوں کو بھگانا ہے، آپس کے اختلافات کو 6 سے 8 ماہ تک ختم کر دیں۔ کسی بھی وقت جنرل الیکشن ہوسکتے ہیں، کارکن ابھی سے تیاری شروع کردیں۔انہوں نے کہا  کہ آزاد کشمیرالیکشن میں کھلے عام دھاندلی ہوئی، کھلے عام پیسے بانٹے گئے تھے۔ان کا کہنا تھا کہ اگر ہم مل کر کام کریں گے تو دنیا کی کوئی طاقت ہمیں اگلی حکومت بنانے سے نہیں روک سکتی۔ اگر اگلی حکومت پیپلز پارٹی کی بنانی ہے تو کراچی کی سیٹوں اور اونرشپ کی ضرورت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں