غلط وقت پرایل این جی ٹرمینل کی مرمت، گیس اور بجلی کے بحران کاسبب،ذرائع

اسلام آباد (اصغر چوہدری) متعلقہ حکام کی غفلت و بد انتظامی کے باعث بجلی و گیس بحران نے شدت اختیار کی. ایل این جی ٹرمینل کی مرمت کے باعث ہزاروں میٹرک ملین کیوبک فٹ گیس سسٹم سے نکل گئی. پاور ڈویژن کے مستند زرائع کے مطابق ملک میں بجلی و گیس بحران کی کہانی سامنے آئی ہے حکومت نے غلط وقت میں ایل این جی ٹرمینل کی مرمت کا فیصلہ کیا جو لوڈشیڈنگ کی صورت میں عوام کے گلے پڑا ہے. جس کے باعث 1152 ایم ایم سی ایف ڈی سسٹم سے نکل گئی جبکہ گیس سپلائی میں حکومت نے پاور پلانٹس کو تیسری ترجیح میں رکھا ہوا ہے دوسری جانب مختلف آئل ریفائنری کے پاس فرنس آئل کا وافر ذخیرہ موجود تھا تاہم حکومت نے فرنس آئل سے بجلی پیدا کرنے ہر پابندی لگا رکھی تھی اور آئل ریفائنری نے فرنس آئل کے استعمال تک اضافی تیل درآمد کرنے سے انکار کر دیا تھا زرائع کے مطابق تربیلا پاور ہاوس سے 3500 میگاواٹ کم بجلی حاصل ہورہی ہے اور ملک میں مجموعی طلب 25 ہزار میگاواٹ جبکہ دستیاب بجلی 19 ہزار میگاواٹ ہے جس سے بجلی کے شارٹ فال چھ ہزار تک پہنچ چکا ہے جسکی وجہ سے غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا دورانیہ آسمان تک پہنچ چکا. زرائع کے مطابق کسی بھی گیس فیلڈ یا ٹرمینل کی مرمت کا وقت اکتوبر رکھا گیا ہے جبکہ حکومت نے ایل این جی ٹرمینل کی مرمت جون میں شروع کر دی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں