وزیراعظم کے دورے کا اہم مقصد پاکستان، افغانستان اور ازبکستان کے درمیان سفری سہولیات میں اضافہ کرنا ہے، چوہدری فواد حسین

تاشقند (نیوز ڈیسک) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے کہا ہے کہ وزیراعظم کے دورہ ازبکستان سے پاکستان اور وسطی ایشیائی ممالک کے ساتھ معاشی اور سیکورٹی اعتبار سے نیا دروازہ کھلے گا۔ امید ہے آنے والے سالوں میں وسطی ایشائی ریاستوں کے ساتھ تجارت میں کئی گنا اضافہ ہوگا۔ جمعرات کو دورہ ازبکستان کے حوالے سے اپنے ویڈیو بیان میں انہوں نے کہا کہ صدارتی محل میں وزیراعظم عمران خان کی ازبکستان کے وزیراعظم سے ملاقات ہوئی ہے۔ وزیراعظم عمران خان ازبکستان کے صدر سے بھی ملاقات کریں گے۔ انہوں نے بتایا کہ اس دورہ کا اہم مقصد پاکستان، افغانستان اور ازبکستان کے درمیان سفری سہولیات میں اضافہ کرنا ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ کراچی اور گوادر کی بندرگاہوں سے سامان تاشقند تک آئے۔ اس سے وسطی ایشیائی ریاستوں کے ساتھ ہماری تجارت میں کئی گنا اضافہ ہوگا۔ وزارت تجارت نے اس حوالے سے بہت کام کیا ہے۔ چوہدری فواد حسین نے بتایا کہ اس دورہ کا دوسرا حصہ افغانستان میں امن سے متعلق ہے۔ کل (جمعہ) کو یہاں ایک اہم کانفرنس ہونے جا رہی ہے جس میں علاقائی روابط پر بات ہوگی اور وزیراعظم علاقائی روابط کی اہمیت پر گفتگو کریں گے۔ انہوں نے بتایا کہ علاقائی روابط سے معیشت کی وسعت میں بے پناہ اضافہ ہوگا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ بڑی تعداد میں کاروباری افراد بھی تاشقند آئے ہوئے ہیں، انہیں یہاں کاروبار کے مواقع میسر آئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس دورہ سے پاکستان اور ازبکستان کے درمیان وسطی ایشیائی ریاستوں کے درمیان معاشی اور سیکورٹی اعتبار سے دروازہ کھلے گا۔ وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ وزیراعظم اور ان کے وفد کو بہت احترام سے نوازا گیا۔ سیکورٹی کے بھرپور انتظامات کئے گئے تھے۔ ہیلی کاپٹر فضاءمیں گردش کرتے رہے۔ وزیراعظم عمران خان کا ازبکستان پہنچنے پر پرتپاک استقبال کیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں