کراچی میں شدید پانی کے بحران کا سامنا، شہری پریشان

کراچی (نیوز ڈیسک) کراچی کو گزشتہ چار روز سے پانی کے شدید بحران کا سامنا ہے۔ حالیہ بارشوں کے دوران بجلی کے بریک ڈاؤن کی وجہ سے بیک پریشر ہوا اور شہر کو پانی فراہم کرنے والی 10 میں سے 3 لائنیں پھٹنے کے باعث 90 کروڑ گیلن پانی کم ملنے سے شہر کے متعدد علاقے بری طرح متاثر ہیں۔ واٹر بورڈ حکام کے مطابق کراچی کو 72 انچ قطر کی 10 لائنوں سے پانی فراہم کیا جاتا ہے لیکن گزشتہ تین دن کے دوران 4 بار بجلی کے بریک ڈاؤن ہونے کے سبب بیک پریشر ہوا اور تین لائنیں پھٹ گئیں۔ متعلقہ حکام کے مطابق کراچی کا پانی دھابیجی سے 60 کلومیٹر کینال کے ذریعے کشش ثقل کے ذریعے پہنچتا ہے پھر انہیں 72 انچ قطر کی 10 مختلف لائنوں کے ذریعے آگے منتقل کیا جاتا ہے، اس دوران بجلی بند ہو جائے تو لاکھوں گیلن پانی واپس لوٹ جاتا ہے اور لائنیں پھٹ جاتی ہیں۔ دوسری جانب چیف انجینئر دھابیجی انتخاب احمد نے جیو نیوز کو بتایا کہ 4 روز میں 90 کروڑ گیلن پانی کم فراہم ہوا جبکہ ریزیڈنٹ انجینئر کے مطابق بجلی کے ایک بریک ڈاؤن سے جو خرابی پیدا ہوتی ہے اسے بحال کرنے میں کم از کم تین روز لگ جاتے ہیں۔ خیال رہے لائنیں متاثر ہونے کے باعث جن علاقوں میں پانی کی فراہمی معطل ہے ان میں گلشن اقبال، گلستان جوہر، نارتھ کراچی، نارتھ ناظم آباد اور پی ای سی ایچ ایس سمیت درجنوں علاقے شامل ہیں۔ تاہم ایم ڈی واٹر بورڈ کا دعویٰ ہے کہ جمعے تک لائنوں کی مرمت سمیت پانی کی مکمل بحالی شروع کر دی جائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں