افغانستان سے31اگست تک ا نخلاء مکمل کر لیں گے،داعش ایک مسلسل خطرہ ہے،امریکی صدر جو با ئیڈن

واشنگٹن (نیوزٹویو)امریکی صدر جو بائیڈن نےامید ظا ہر کی ہے کہ 31اگست تک ہم اپنا انخلاء مکمل کر لیں گےاس کے بعد ہمیں افغانستان میں رکنے کی ضرورت نہیں پڑے گی صدر جو با ئیڈن نے اپنے خطاب میں کہا ہے کہ طالبان پر پابندیاں ان کے اقدامات پر منحصر ہیں امریکا کی پہلی ترجیح اپنے شہریوں کو کابل سے جلد سے جلد نکالنا ہے۔ہم جانتے ہیں کہ دہشت گرد صورتحال کا فائدہ اٹھانا چاہتے ہیں اوریہ اب ابھی ایک خطرناک آپریشن ہے شدت پسند تنظیم داعش ایک مسلسل خطرہ ہے۔ کابل سے ہزاروں افراد کا انخلا مشکل اور تکلیف دہ عمل ہے
جوبائیڈن نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 31اگست کے بعد اگرافغانستان میں رکنے کی ضرورت پڑی تو اس کےلیے بات چیت جاری ہے، انہوں نے ایک مرتبہ پھر افغانستان سے انخلا کو درست فیصلہ قرار دیا۔ مزید کہا کہ قبضے کے بعد ابھی تک طالبان نےامریکی فوجیوں پر حملہ نہیں کیا۔

امریکی صدر نے انخلا کے لیے مدد کرنے والوں کا شکریہ بھی ادا کیا۔ یہ امر قابل ذکر ہے کہ افغانستان سے فوجی انخلا کے امریکی فیصلے کو دنیا بھر سے تنقید کا سامنا ہے، کابل پر طالبان کے تیز رفتار قبضے کی وجہ بھی امریکی فوج کا غیر ضروری عجلت میں اںخلا قرار دیا جا رہا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں