افغانستان کےمسئلےپرپاکستان کو قربانی کا بکرا بنانے کی سازش ناکام ہو گئی،وزیرداخلہ شیخ رشید

 اسلام آباد(نیوزٹویو) وفاقی وزیرداخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ پاکستان کو قربانی کا بکرا بنانے کی سازش ناکام ہو گئی ہے پاکستان نے امریکا اور طالبان کو ایک ٹیبل پر لانے کیلئے کلیدی کردار ادا کیا ہےشیخ رشید نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہو ئےکہا کہ امن کے لیے پاکستان کی خدمات سنہری حروف میں لکھی جائیں گی۔ مستحکم اور پر امن افغانستان پاکستان کیلئے ضروری ہے۔ ازبکستان میں اشرف غنی کو سمجھانے کی بڑی کوشش کی تھی لیکن اشرف غنی کے دل میں فتور تھا اور عمران خان کو اندازہ تھا کہ اشرف غنی بہت زیادہ غلط فہمی کا شکار تھا۔ دنیا کی پاکستان کو قربانی کا بکرا بنانے کی سازش ناکام ہوئی۔ دنیا میں پاکستان بہت اہم ملک ہے اور ہم کسی کو پاکستان میں مداخلت کرنے نہیں دیں گے۔ طورخم اور چمن بارڈر بالکل پرسکون ہیں۔ سیکیورٹی کے لیے آرمڈ فورسز سمیت دیگر تمام ادارے الرٹ ہیں  شیخ رشید بولے طالبان کو تسلیم کرنے کا فیصلہ وزیراعظم اور وزارت خارجہ نے کرنا ہے۔ سرحدوں کی حالت بالکل ٹھیک ہے بھارتی میڈیا جھوٹ بول رہا ہے۔ پاکستان میں کوئی افغان مہاجر نہیں آیا۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ سفارت کاروں کو بھی ٹرانزٹ ویزا دے رہے ہیں جبکہ پرامن افغانستان پاکستان کے لیے اتنا ہی اہم ہے جتنا افغانستان کے لیے ہے۔ ہمارے تمام بارڈرز محفوظ ہیں اور کام کر رہے ہیں۔ کابل سے 900 کے قریب غیرملکی سفارتی عملے کو لائے ہیں جبکہ  افغانستان سے 613 پاکستانیوں کو واپس لا چکے ہیں آئندہ دو روز میں انخلا کا عمل مکمل ہو جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ طالبان کو تسلیم کرنا یا نہ کرنا عمران خان اور وزارت خارجہ کا فیصلہ ہے جبکہ ہم نے افغان مہاجرین کا کوئی انتظام کیا ہے اور نہ ہی کوئی آرہا ہے لیکن تمام غیر ملکی صحافیوں، میڈیا ملازمین ،عالمی اداروں کے اہلکاروں کو ٹرانزٹ ویزا دے رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ وزارت داخلہ میں خود بیٹھ کر امن وامان کے حالات کا جا ئزہ لے رہا ہوں عاشورہ کے جلوس کی سیکیورٹی کے لیے ہزاروں اہلکار تعینات ہیں۔ لوگ اپنے عقیدے کو چھوڑیں نہیں اور دوسروں کے عقیدے کو چھیڑیں نہیں۔ عزاداروں سےاپیل کرتے ہیں ، ایس اوپیزکا خیال رکھیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں