افغانستان کے مسئلے پر برطانوی پارلیمنٹ کے ہنگامی اجلاس، وزیر اعظم بورس جانسن پر شدید تنقید

افغانستان (نیوز ڈیسک) افغانستان کے مسئلے پر برطانوی پارلیمنٹ کے ہنگامی اجلاس میں اراکین کی جانب سے وزیر اعظم بورس جانسن پر شدید تنقید کی گئی۔ برطانوی پارلیمنٹ میں افغانستان کی صورتحال پر ہونے والے ہنگامی اجلاس میں حزب اختلاف کے ساتھ ساتھ حکمراں جماعت کے اراکین بھی وزیراعظم بورس جانسن پر برس پڑے۔اپوزیشن لیڈر کیئر اسٹارمر نے کہا کہ حکومت فوجیوں کے انخلا کی منصوبہ بندی میں ناکام رہی، افغان پناہ گزینوں کو برطانیہ لاکر آباد کرنے کے لیے 20 ہزار کا ہدف بہت کم ہے۔ سابق برطانوی وزیراعظم ٹریزامے نے کہا کہ طالبان سے متعلق کیا ہماری انٹیلی جنس واقعی اتنی کمزور تھی؟ یا ہم نے سوچا کہ بس امریکا کے پیچھے چلتے رہو سب ٹھیک ہو جائے گا۔ وزیراعظم بورس جانسن نے کہا کہ طالبان سے متعلق فیصلہ ان کی باتیں نہیں بلکہ ان کا طرز عمل دیکھ کر کریں گے، افغانستان میں نیٹو کا اہم مشن کامیاب رہا اور بڑی حد تک القاعدہ کے دہشت گردوں کا صفایا کر دیا گیا۔ برطانوی وزیراعظم کا کہنا تھا کہ افغان عوام کو بہتر تعلیمی سہولتیں، خواتین کو حقوق اور شفاف انتخابات کا موقع ملا، جلد افغانستان کے مسئلے پر جی سیون کا اجلاس بھی بلائیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں