جوڈیشل کمیشن کی چیف جسٹس سندھ ہا ئیکورٹ کے انکار کے باوجود انہیں سپریم کورٹ کا ایڈہاک جج تعینات کرنے کی منظوری

اسلام آباد(نیوزٹویو) جوڈیشل کمیشن نے چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ احمد علی شیخ کے انکار کے باو جود انہیں سپریم کورٹ کا ایڈہاک جج بنانے کی منظوری دے دی ہے جبکہ جوڈیشل کمیشن اجلاس میں اٹارنی جنرل نےاپنے تحریری موقف اس معاملے کو حسا س قرار دے دیا ہے اورلکھا ہے کہ جسٹس احمد علی شیخ کے انکار سے معاملہ حساس ہوگیا اٹارنی جنرل نے اپنی رائے چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ کی رضامندی سے مشروط کر دی ہے اٹارنی جنرل نے را ئے دی ہے کہ اگر چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ ایڈہاک جج تعینات ہونے پر رضامند ہیں تو تعیناتی کی حمایت کرتا ہوں اگر چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ سپریم کورٹ ایڈہاک جج تعینات نہیں ہونا چاہتے تو آئین اس معاملے پر خاموش ہےچیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ سندھ کی عوام اور ہائی کورٹ کے مفاد کو مد نظر رکھتے ہوئے فیصلہ کریں انہوں نے کہا کہ چیف جسٹس سندھ ہا ئیکورٹ کی مرضی کے خلاف انہیں مجبور کر کے سپریم کورٹ میں ایڈہاک جج تعینات کرنا، ججز کے لیے ایک ناپسندیدہ مثال بنے گی جس کے ناقابل برداشت نتائج عدلیہ اورملک کے لیے اچھے نہیں ہوں گے  دوسری جانب انہوں نے سندھ ہا ئیکورٹ کے چیف جسٹس سے بھی اپنے فیصلے پر نظرثا نی کی درخواست کی ہے  

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں