حکومت سازی،انس حقانی کی قیادت میں طالبان وفد کی حامدکرزئی،عبداللہ عبداللہ اورگلبدین حکمت یارسے پہلی باضابطہ ملاقات

کابل (نیوزٹویو)افغانستان میں نئی حکومت کی تشکیل کے لیےمذاکرات کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے اس حوالے سےافغان طالبان کے وفد نے انس حقانی کی قیادت میں کابل میں حکومت سازی کے لیے تشکیل دی گئی سابق صدر حامد کرزئی،گلبدین حکمت یار اور سابق چیف ایگزیکٹو عبداللہ عبداللہ پر مشتمل تین رکن کو نسل سے ملاقات کی ہےانس حقانی طالبان کے سیاسی دفتر کے رکن ہیں ملاقات میں افغان سینیٹ کے سابق چیئرمین فضل ہادی سمیت دیگر حکام بھی موجود تھے۔ ملاقات میں حکومت سا زی سمیت مختلف سیاسی ا مو ر اور دیگر معاملا ت پر غور کیا گیا ترجمان افغان طالبان ذبیح اللہ مجاہد نے طالبان قائدین کی افغان سیاسی رہنماؤں سےکابل میں پہلی باقاعدہ ملاقات کی تصدیق کی ہے۔ذبیح اللہ مجاہد نے بتایا کہ طالبان وفد نے سیاسی قائدین کے سکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیا، افغان سیاسی قیادت کو فول پروف سکیورٹی فراہم کر دی ہے۔افغان طالبان نے افغان شہریوں سے کہا ہے کہ ان کو ہتھیار اور گولہ بارود انتظامیہ کے حوالے کرنے ہوں گے۔طالبان رہنما عامر خان متقی کے مطابق افغانستان میں جامع حکومت قائم کی جائے۔افغانستان میں طالبان کے نظم و نسق کے لیے اقدامات جاری ہیں، طالبان نے کہا ہے افغان شہریوں کو ہتھیار، گولہ بارود ان کے حوالے کرنا ہوں گے، افغان طالبان کے مزید رہنما منظر عام پر آئیں گے۔ دنیا ان کے رہنماؤں کو بتدریج دیکھے گی، کوئی راز داری نہیں رہے گی۔طالبان رہنما عامر خان متقی نے کہا ہے کہ افغانستان میں جامع حکومت قائم کی جائے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں