چین کاافغانستان میں سفارتخانہ قائم رکھنےاورانسانی امداد جاری رکھنے کا فیصلہ ،ترجمان طالبان سہیل شاہین

اسلام آباد(ویب ڈیسک)طالبان کےترجمان سہیل شاہین نے کہا ہے کہ چین نے افغانستان میں اپنا سفارت خانہ برقرار رکھنے کا فیصلہ اورافغانستان کے لیے اپنی انسانی امداد جاری رکھنے کا وعدہ کیا ہے۔طالبان کے ترجمان سہیل شاہین نے جمعہ کواپنے ٹوئٹر پراپنےٹویٹ میں لکھا  ہےکہ طالبان کے سیاسی دفتر کے ڈپٹی ڈائریکٹر عبدالسلام حنفی نے عوامی جمہوریہ چین کے نائب وزیر خارجہ وو جیانگ ہاؤ کے ساتھ فون پر بات چیت کی۔ فریقین نے ملک کی موجودہ صورت حال اور مستقبل کے تعلقات پر تبادلہ خیال کیا۔چینی نائب وزیر خارجہ نے کہا کہ وہ کابل میں اپنا سفارت خانہ برقرار رکھیں گے ، ہمارے تعلقات ماضی کے مقابلے میں بہتر ہوں گے۔افغانستان خطے کی سلامتی اور ترقی میں اہم کردار ادا کر سکتا ہے۔ چین اپنی انسانی امداد بالخصوص کوڈ 19کے علاج کے لیے جاری رکھے گا

واضح رہے کہ اس سے قبل 16 اگست کو چین کی وزارت خارجہ کےترجمان ہوا چنینگ نے کہا تھا کہ چین افغان عوام کے اس حق کا احترام کرتا ہے کہ وہ آزادانہ طور پر اپنی قسمت کا تعین کریں اور وہ (چین) افغانستان کے ساتھ دوستانہ اور باہمی تعاون کے فروغ کو جاری رکھنا چاہتا ہے۔انہوں نے کہا تھا کہ طالبان نے بارہا چین کے ساتھ اچھے تعلقات استوار کرنے کی امید ظاہر کی ہے اور یہ کہ وہ افغانستان کی تعمیرِنو اور ترقی میں چین کی شرکت کے منتظر ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں