طالبان کا دا عش سے نمنٹے کا فیصلہ،کسی بیرونی تعاون کی ضرورت نہیں ،ترجمان سہیل شا ہین

دوحہ (نیوزٹویو) طالبان نے داعش سے خود نمٹنے کا فیصلہ کیا ہے دوحہ میں طالبان حکومت کےترجمان طالبان سہیل شاہین  نے کہا ہے کہ طالبان  داعش کے خلاف کارروائی کی صلا حیت رکھتے ہیں ہمیں  داعش سے نمٹنے کےلیےامریکی تعاون کی ضرورت نہیں ہےدوحہ میں امریکہ سے مذاکرات سے قبل  طالبان نے واضح کر دیا ہے کہ جہادی گروپ دولتِ اسلامیہ کو کنٹرول کرنے کا معاملہ وہ خود حل کریں گے۔افغانستان میں داعش کے خلاف کارروائی کے لیے امریکا سے کسی قسم کا تعاون نہیں کیا جائے گا، طالبان خود داعش کا مقابلہ کرنے کی مکمل صلاحیت رکھتے ہیں اس وقت طالبان کے اعلیٰ حکام اور امریکا کے نمائندوں کے  قطر کے دارالحکومت دوحہ میں  مذاکرات جاری ہیں۔ دونوں فریقوں کے عہدیداروں نے کہا کہ زیر بحث مسائل میں شدت پسند گروہوں کو لگام ڈالنا اور غیر ملکی اور افغان شہریوں کو ملک سے نکالنا شامل ہے ۔واضح رہے کہ افغانستان میں گزشتہ ہفتوں کے دوران دہشت گردی کی متعدد کارروائیوں کی ذمہ داری داعش نے قبول کی ہے، جمعہ کو مسجد میں ہونے والے بم دھماکے میں 100 کے قریب افراد جاں بحق ہوئے تھے۔ دوسری جانب طالبان نے بھی داعش کے خلاف کارروائیوں کا آغاز کردیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں