نوازشریف کیس میں قانون ایک شخص کے لیے استعمال ہوا،دھاندلی کی پیداوارانتخابی اصلاحات دے،قیامت کی علامت ہے،مولانا فضل الرحمنٰ

اسلام آباد(نیوزٹویو) پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ نوازشریف کے کیس میں قانون کو ایک شخص کے لیےا ستعمال کیا گیا دھاندلی کی پیداوار ہمیں انتخابی اصلاحات دے تو یہ قیامت کی علامت ہو گی ناجائز حکومت کو کسی طرح قبول نہیں کرینگے یہ عوام کو کچھ نہیں دے سکی پا کستان میں اس طرح کی  غیر ضروری قانون سا زیاں ہورہی ہیں کہ ہمارے ملک کی عدالتوں کے فیصلے دنیا میں نظیر کے طور پر پیش نہیں کیے جا سکتے پاکستان کے عوام سخت جان ہیں   پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے دیگر رہنماؤں کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ قانون کسی ایک فرد کے لیے نہیں بنایا جاتا لیکن حکومت صدارتی آرڈیننس لا کر اپنی سہولت کے لیے قانون سازی کر رہی ہے قانون ایک شخص یا فرد واحد کے لیے نہیں بنا ہے لیکن نواز شریف کے حوالے سےیہ  سب کیا گیاہےانہوں نے کہا کہ یہ قانون سازی ایک اچھی مثال نہیں ہے۔ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) حکومت کو توسیع پی ڈی ایم نہیں کسی اور وجہ سے ملی ہے جبکہ یہ حکومت نااہل اور نالائق ہے جو کچھ ڈیلیور نہیں کر سکی۔ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ تحریک انصاف کی نااہلی پاکستان کی تاریخ کا حصہ بن چکی ہے اور ہم سڑکوں پر آ کر اسے آشکار نہ کرتے تو یہ کبھی تاریخ کا حصہ نہ بنتی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں